National

گائے کو قومی جانور قرار دینے کا مطالبہ راجیہ سبھا میں اٹھا

نئی دہلی، 6 دسمبر: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کروڑی لال مینا نے گائے کو ملک کا قومی جانور قرار دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے بدھ کو راجیہ سبھا میں کہا کہ یہ معاملہ ملک کے معاشی اور روحانی شعور سے جڑا ہوا ہے۔ ایوان میں زیرو آور کے دوران مسٹر مینا نے گائے کو قومی جانور قرار دینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ گائے کی ہندوستان کے لیے بہت اہمیت ہے۔ یہ معاشرے کے معاشی اور روحانی شعور کی بنیاد ہے۔ انہوں نے کہا کہ گائے کا گوشت کھانا کسی کا بھی بنیادی حق نہیں ہو سکتا۔ بہت سے مغل حکمرانوں نے بھی گائے کو مقدس جانور سمجھتے ہوئے اس کے ذبیحہ پر پابندی عائد کر دی تھی۔ انہوں نے کہا کہ دیہی معیشت میں گائے کی بہت اہمیت ہے۔ اس کے گوبر اور پیشاب سے کھاد بنائی جاتی ہے جو زراعت کے لیے بہترین سمجھی جاتی ہے۔ بی جے پی کے کیلاش سونی نے جنگلی چوہوں کی دہشت کا مسئلہ اٹھایا اور انہیں مارنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے دیہی معیشت کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ حکومت جنگلی چوہوں کو مارنے کے لیے گرانٹ جاری کرے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی کی کانتا کردم نے اتر پردیش کے ہاپوڑ میں کیندریہ ودیالیہ کھولنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ اس سے مقامی سطح پر بچوں کو بہتر تعلیم فراہم کرنے میں مدد ملے گی۔ بی جے پی کی سیما دویدی نے ملک میں بلاک سطح پر بلڈ فنڈ قائم کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ مریض یا شخص کو ڈیلیوری وغیرہ کے دوران خون کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لیے مقامی سطح پر بلڈ فنڈ قائم کر کے ماں اور بچے کی موت کو بچایا جا سکتا ہے اور زخمیوں کی بھی مدد کی جا سکتی ہے۔

Source: uni news service

Post
Send
Kolkata Sports Entertainment

Please vote this article

0 Responses
Best
Good
Okay
Bad

Related Articles

Post your comment

0 Comments

No comments