National

شکست کے بعد ای وی ایم پر بولے دگ وجے، چپ والی کسی بھی مشین کو ہیک کیا جا سکتا ہے

بھوپال، 5 دسمبر: مدھیہ پردیش اسمبلی انتخابات میں شکست کے بعد کانگریس کے سینئر لیڈر اور سابق وزیر اعلیٰ دگ وجے سنگھ نے ریاست کی کئی سیٹوں پر پارٹی کو ملے پوسٹل بیلٹ کی تعداد کو عام کرتے ہوئے کہا کہ وہ 2003 سے ای وی ایم کی مخالفت کرتے آرہے تھے اور ان کا ماننا ہے کہ چپ والی کوئی بھی مشین ہیک کی جاسکتی ہے۔ مسٹر سنگھ نے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ایکس پر یہ اعداد و شمار پوسٹ کیے ہیں۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا، ’’تمام ووٹروں کا شکریہ جنہوں نے پوسٹل بیلٹ کے ذریعے کانگریس کو ووٹ دیا اور ہم پر اپنے اعتماد کا اظہار کیا! تصویروں کے اعداد و شمار میں ایک ثبوت ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پوسٹل بیلٹ کے ذریعے ہمیں یعنی کانگریس کو 199 سیٹوں پر برتری حاصل ہے۔ جبکہ ان میں سے زیادہ تر سیٹوں پر ای وی ایم کی گنتی میں ہمیں ووٹروں کا پورا بھروسہ نہیں مل سکا۔ یہ بھی کہا جا سکتا ہے کہ جب نظام جیت جاتا ہے تو عوام ہار جاتے ہیں۔ ہمیں فخر ہے کہ ہمارے زمینی کارکنوں نے پورے دل سے کانگریس کے لیے کام کیا اور جمہوریت کے تئیں اپنےاعتماد کو مضبوط کیا۔ ایک اور پوسٹ میں انہوں نے کہا ہے کہ وہ 2003 سے ای وی ایم کے ذریعے ووٹنگ کی مخالفت کر رہے ہیں۔ کوئی بھی مشین جس میں چپ ہو اسے ہیک کیا جا سکتا ہے۔

Source: uni news

Post
Send
Kolkata Sports Entertainment

Please vote this article

0 Responses
Best
Good
Okay
Bad

Related Articles

Post your comment

0 Comments

No comments