بلدیاتی انتخاب: اویسی بن سکتے ہیں کنگ میکر

مکرمی:گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن جی ;245;ایچ ;245;ایم ;245;سی کی کل 150 نشستوں پر ہونے والے انتخابات میں ریاست کی برسر اقتدار تلنگانہ راشٹر سمیتی (ٹی آر ایس) 56 نشستوں کے ساتھ سب سے بڑی پارٹی بن کر ابھری ہے لیکن وہ اکثریت سے دور رہ گئی ۔ جبکہ حیدرآباد کے رکن پارلیمنٹ اسد الدین اویسی کی پارٹی ایم;245;آئی ;245;ایم بغیر کسی نقصان کے 44 نشستوں پر کامیابی حاصل کرنے میں کامیاب رہی ۔ کانگریس کو صرف دو نشستوں پر جیت حاصل ہو سکی ۔
اعداد و شمار پر غور کریں تو اویسی کی پارٹی کاووٹ فیصدجیت کی شرح سے بہتر رہا ہے ۔ اویسی نے 150 ارکان والے کارپوریشن انتخابات میں محض 51 نشستوں پر ہی امیدار اتارے تھے اور ان میں سے انہیں 44 پر جیت حاصل ہوئی ہے ۔ یعنی اویسی کا اسٹرائیک ریٹ 86 فیصد سے زیادہ رہا، جبکہ ٹی آر ایس کو 33 نشستوں کا نقصان اٹھانا پڑا ۔ وزیر اعلیٰ چندر شیکھر راوَ کی پارٹی کو 2016 کے انتخابات کے مقابلہ میں 40 فیصد کم نشستیں حاصل ہوئی ہیں ۔ ٹی آر ایس نے 2016 میں 99 سیٹیں حاصل کی تھیں اور میئر کے عہدہ پر قبضہ کر لیا تھا ۔ اس وقت بی جے پی کو صرف 4 اور اویسی کی ایم آئی ایم کو 44 سیٹیں حاصل ہوئی تھیں ۔ بی جے پی نے دھواں دھار تشہیر کی اور اپنی طاقت کو 12 گنا تک بڑھا لیا ہے ۔ 2018 میں 117 نشستوں پر ہونے والے تلنگانہ اسمبلی کے انتخابات میں بی جے پی نے 100 نشستوں پر امیدوار اتارے تھے لیکن اسے محض 2 نشستوں پر ہی فتح حاصل ہوئی تھی لیکن دو سال بعد ہی پارٹی نے اس جنوبی ریاست میں مقامی سطح پر جگہ بنا لی ہے ۔ بی جے پی 2023 کے اسمبلی انتخابات کیلئے ٹی ;245;آر;245; ایس کیلئے بڑا چیلنج بن کر ابھری ہے ۔ حیدرآباد انتخابات کے نتاءج سہ رخی ہونے کی وجہ سے یہ سوال بھی اٹھ رہا ہے کہ حیدرآباد کا میئر کس جماعت کا ہوگا ۔ چونکہ بی ;245;جے;245; پی نے ٹی ;245;آر;245; ایس کو زبردست نقصان پہنچایا ہے اور 2023 کے انتخابات میں بھی اسے خطرہ محسوس ہو رہا ہے ۔ لہٰذا یہ خیال کیا جا رہا ہے کہ شاید ٹی آر ایس کارپوریشن میں بی ;245;جے ;245;پی کی مدد نہ لے ۔ ادھر، اویسی نے انتخابات کے نتاءج کا اعلان ہونے کے ساتھ ہی کے سی آر کو حمایت دینے کا عندیہ دیا ہے ۔ دراصل، دونوں ہی لیڈران اور جماعتوں کو بی جے پی کے بڑھتے قد سے خطرہ محسوس ہو رہا ہے، لہٰذا یہ ممکن ہے کہ دونوں بی جے پی کے خلاف لام بند ہو جائیں ۔ ایسی صورت حال میں اویسی ٹی آر ایس کیلئے کنگ میکر کا کردار ادا کر سکتے ۔
عبد اللطیف ندوی،رابطہ نمبر:7355097779

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔