دیدی خدمت خلق کیلئے اٹھ کھڑی ہوئیں آج سے ”دُوارے سرکار“ کا آغاز

جمہوریت میں حکومت اور عوام ایک دوسرے کیلئے لازم و ملزوم ہیں۔ حکومت کا کام لوگوں کے دلوں میں جھانکنا اور ان کی واجب ضروریات پوری کرنا ہے۔ جو حکومت اس مقصد میں کامیاب ہوگی وہ عوام کے دلوں پر حکومت کرے گی، اس کی عمر دراز ہوگی۔ اس پس منظر میں مغربی بنگال کی ترنمول کانگریس حکومت بڑی حد تک کامیاب نظر آتی ہے۔ وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی جہاں ایک طرف اپنی سری گرمیوں میں دستور ہند پر عمل کرتی نظر آتی ہیں، وہیں انھوں نے عوامی مفاد میں کام کرنے میں کوئی کسر نہیں اٹھا رکھی ہے۔ نئے سال کی آمد پر وہ ایک ادائے خاص کے ساتھ اپنے مشن پر روانہ ہورہی ہیں۔ ان کی نئی عوامی خدمت ”دوارے سرکار“ کے عنوان سے آج سے دو مہینے کےلئے شروع ہورہی ہے۔ اب مختلف قسم کی عوامی خدمات نہ صرف یہ کہ گھر گھر پہنچائی جائیں گی بلکہ فلاحی اسکیموں کے حوالے سے شکایات کی سنوائی بھی ہوگی اور ان کے ازالہ کی صورت نکالی جائے گی۔ ہر گھر تک عوامی خدمات کے فائدے پہنچانے کی غرض سے یکم دسمبر سے 30 جنوری 2021ءکے دوران خصوصی مہم چلائی جائے گی جس کے دوران بیس ہزار کیمپ منظم کئے جائیں گے۔ پہلے مرحلے کے دوران جو لوگ آدھار کارڈ اور ووٹر شناختی کارڈ مہیا کریں گے انھیں ”سواستھ ساتھی“ کارڈ فراہم کیا جائے گا۔ اس معاملے میں پنچایت اور بلدیاتی حکام عام لوگوں کی مدد کریں گے۔ ’کھادیہ ساتھی ‘ کارڈ مہیا کرکے راشن سے متعلق شکایات کا ہاتھ کے ہاتھ ازالہ کیا جائے گا۔ حال میں وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ’دوارے سرکار‘ پروگرام کا اعلان کیا تھا تاکہ بنگال کے رہنے والے تمام لوگوں کو سواستھ کارڈ مہیا کیا جاسکے۔ سواستھ ساتھی کارڈ کے تحت ہر قسم کے سرکاری اور پرائیوٹ اسپتالوں میں سال بھر میں 5لاکھ روپئے کی حد تک مفت علاج کیا جائے گا۔ بعد ازاں ریاستی حکومت کے ایک نوٹیفیکیشن کے مطابق دیگر خدمات کے معاملے میں بھی اس کی توسیع کردی گئی ہے۔ اب لوگ ’کنیا شری، شکشا شری، روپا شری‘ اور ’ایکیہ شری‘ جیسی اسکیموں کیلئے اپلائی کرسکیں گے۔ اسکالر شپ کی درخواستیں بھی وصول کی جائیں گی۔ دلت، قبائل اور دیگر چھوٹی ذاتوں کیلئے سرٹیفیکٹ کی درخواستیں بھی وصول کی جائیں گی۔ ان کے علاوہ جے جوہار اور پتاسیلی بندھو اسکیموں کیلئے بھی اندراج ہوسکے گا۔ چیف سکریٹری الاپن بندو پادھیائے نے کہاکہ کیمپوں کے انعقاد کا مقصد یہ ہے کہ اگر سرکاری وعدوں میں کوئی کمی رہ گئی ہے تو اس کا ازالہ کیا جائے۔ کرشک بندھو اسکیم کے تحت کسان مدد کی درخواست دے سکتے ہیں۔ اسی طرح سے بے روزگار منریگا کےلئے اپلائی کرسکتے ہیں جس کے تحت ایک سو دن کیلئے روزگار مہیا کیا جائے گا۔ وزیر برائے اطلاعات و ثقافتی امور اندرانی سین نے ریاستی ہیڈ کوارٹر نبانہ میں بتایا کہ دوارے سرکار اسکیم ریاست کے سارے 344 بلاکوں پر محیط ہوگی تاکہ مغربی بنگال کی پوری آبادی کو سواستھ ساتھی کے تحت لایا جاسکے۔ خواتین اور بچوں کے فروغ کے محکمہ کی وزیر ششی پانجہ نے کہاکہ ترنمول کانگریس 12 دسمبر سے عورتوں کو مرکزیت دینے والی اسکیموں کا آغاز کرے گی۔ پارٹی کا غیر سیاسی محاذ ”بنگو جنانی“ ان خواتین تک بھی پہنچے گا جو کسی پارٹی کی حامی نہیں ہیں۔ بنگو جنانی کی چیئرپرسن کاکولی گھوش دستیدار نے کہاکہ اس سال 55000 آشا ورکروں کی عزت افزائی کی گئی ہے جنھوں نے کورونا وبا کے دوران عوام کی خدمت کی۔ ”موہیشا مردنی“ اسکیم کے تحت عورتوں کو با اختیار بنایا گیا اور کم سے کم 5.5 لاکھ خاندانوں تک رسائی حاصل کی گئی۔ غرضیکہ نئے سال پر ترنمول کانگریس اپنی جملہ عوامی فلاحی اسکیموں کے ساتھ جادہ پیما ہوگی تاکہ ہر کس و ناکس کا اعتماد حاصل کیا جاسکے۔
٭٭

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔