پنجاب میں پانچویں ، آٹھویں اور دسویں جماعت کے طلباء کو اگلی کلاس میں پرموٹ کر دینے کا اعلان

چنڈی گڑھ ، 15 اپریل پنجاب میں کووڈ بحران کی وجہ سے طلبا کے تحفظ کے پیش نظر پانچویں ، آٹھویں اور دسویں جماعت کے طلباء کو بغیر امتحان دیئے اگلی کلاس میں پرموٹ کرنے کا فیصلہ کیاگیا ہے اسی طرح پہلے سے موخر ہونے والی پنجاب اسکول ایجوکیشن بورڈ کے بارہویں جماعت کے امتحان کے بارے میں فیصلہ صورتحال کے پیش نظر بعد میں کیا جائے گا۔ وزیر اعلی نے یہ فیصلے آج محکمہ تعلیم کے اعلی عہدیداروں اور طبی ماہرین کے ساتھ منعقدہ ایک ورچول میٹنگ میں کیا۔

کیپٹن سنگھ نے کہا کہ 30 اپریل تک ریاستی حکومت نے تمام تعلیمی ادارے بند کردیئے ہیں تاکہ 11 سے 20 سال کی عمر کے نوجوانوں میں پازیٹیو شرح کو کم کیا جاسکے۔ یہ راحت امتحان دینے والے طلبا کے لئے ضروری تھا۔

انہوں نے محکمہ تعلیم کو حکم دیا کہ کلاس پانچ کے طلباء پانچ مضامین میں سے چار مضامین کے امتحانات پہلے ہی دے چکے ہیں اور پنجاب اسکول ایجوکیشن بورڈ چاروں مضامین میں حاصل کرنے والے نمبرات کی بنیاد پر نتائج کا اعلان کرسکتا ہے۔ اسی طرح ہشتم اور دسویں جماعت کے طلباء کا بھی ان کے پری بورڈ امتحانات میں حاصل کردہ نمبروں کی بنیاد پر نتائج کا اعلان کرسکتا ہے۔

وزیر اعلی نے رواں ہفتہ مرکزی وزیر تعلیم کو ایک خط لکھ کر جس میں ریاست میں کووڈ کے تیزی سے پھیلاؤ کے پیش نظر سی بی ایس ای کی کلاس 12 کی امتحان منسوخ کرنے کے مرکز کے فیصلے پر اطمینان کا اظہار کیا گیا۔

جلاس میں میڈیکل ایجوکیشن کے وزیر او پی سونی ، وزیر تعلیم وجے اندر سنگلا ، چیف سکریٹری وینی مہاجن ، ڈائریکٹر جنرل پولیس دنکر گپتا موجود تھے۔

(یواین آئی)