اقلیتی فرقوں کو ریزرویشن دی جائے: آل پارٹی سکھ کارڈی نیشن کمیٹی کا مطالبہ

سری نگر، 23 فروری  آل پارٹی سکھ کارڈی نیشن کمیٹی (اے پی ایس سی سی) نے سکھ برادری کے ممبران کو جموں وکشمیر اسمبلی نشستوں کی حد بندی کے عمل سے دور رہنے کی تاکید کرتے ہوئے حکومت سے جموں وکشمیر کے اقلیتی فرقوں کو ریزرویشن دینے کا مطالبہ کیا ہے۔
مذکورہ کمیٹی کے چیئرمین جگموہن سنگھ رینہ نے منگل کے روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ جموں وکشمیر کے اقلیتی فرقوں کے لئے کسی ریزرویشن کا اعلان نہیں کیا گیا ہے لہذا سکھ برادری کے ممبران حد بندی مشق میں شرکت نہیں کریں گے۔۔
انہوں نے کہا کہ حدی بندی کمشن کے ممبران کو ملنے کا کوئی فائدہ ہی نہیں ہے کیونکہ ارباب اقتدار اقلیتی فرقے کے لوگوں کو در پیش مسائل کی طرف متوجہ ہی نہیں ہیں۔
بیان میں موصوف نے کہا کہ حد بندی کمشن اسی وقت اپنا وقار کھو بیٹھے گا جس وقت وہ اقلتی فرقوں کو اپنے ساتھ نہیں لے گا۔
انہوں نے کہا میں اپنی برادری کے لوگوں سے اپیل کرتا ہوں کہ وہ اس عمل سے دور رہیں اور اسی صورت میں اس عمل میں شرکت کریں جب جموں وکشمیر کے اقلیتی فرقوں کو ریزرویشن دینے کا اعلان کیا جائے گا۔
ان کا کہنا تھا کہ جموں اور کشمیر دونوں صوبوں کی کئی اسمبلی نشستوں میں سکھ برادری سے وابستہ ووٹراں کی کافی تعداد موجود ہے جو ایک ایم ایل اے کی تقدیر کا فیصلہ کرتے ہیں۔
موصوف نے کہا کہ ہم نے ماضی میں بھی اقلیتی فرقوں کو ریزرویشن دینے کی بات کی لیکن اس کی طرف کوئی دھیان نہیں دیا گیا۔

(یو این آئی)