قومی دارالحکومت میں صبح کہرا رہا، درجہ حرارت 4.2 ڈگری سیلسیس

 نئی دہلی، 22 جنوری  دہلی کے باشندوں کو جمعہ کے روز صبح اٹھتے ہی کہرے کا سامنا کرنا پڑا اور یہاں درجہ حرارت 4.2 ڈگری سیلسیس پر آ گیا جو معمول سے تین ڈگری کم ہے۔ محکمہ موسمیات کے افسران نے بتایا کہ کہرے کے سبب صفدر جنگ اور پالم میں حد نگاہ 350 میٹر تھی۔ محکمہ کے مطابق گھنے کہرے سے حد نگاہ صفر سے 50 میٹر کے درمیان ہوتی ہے۔ اگر گھنا کہرا چھایا رہتا ہے تو حد نگاہ 51 سے 200 میٹر کے مابین ہوتی ہے، متوسط کہرا چھائے رہنے پر حد نگاہ 201 سے 500 میٹر اور ہلکا کہرا چھانے پر حد بصارت 501 سے 1000 میٹر تک رہتی ہے۔ امید ہے کہ سردی سے کچھ راحت ہوگی۔ پروائی ہوا اور بادل کے چھانے سے اتوار تک درجہ حرارت نو ڈگری سیلسیس تک بڑھنے کا امکان ہے۔ قومی دارالحکومت میں مشرقی ہوا (پروائی) چلنی شروع ہو گئی ہیں۔ اس دوران ہوا کا معیار اور موسم کی پیش گوئی اور ریسرچ اپ ڈیٹ سسٹم کے مطابق دارالحکومت میں ہوا کا معیار انڈیکس پھر سے 301 پر پہنچ کر بے حد خراب کی کٹیگری میں پہنچ گیا۔ سردیوں میں پی ایم 10 کے بجائے پی ایم 2.5 خصوصی طور پر زیادہ آلودہ ہے۔ جمعرات کو ہوا کے معیار کا اندازہ 290 لگایا گیا ہے جو خراب کٹیگری میں آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 23 اور 24 جنوری کو ہوا کے معیار میں معمولی بہتری کا امکان ہے۔

(یو این آئی)