راجیو بنرجی بی جے پی میں شامل ہونگے یا نہیں تعطل اب بھی بر قرار

کلکتہ ۔ 24دسمبر(مشرق نیوز ) اسمبلی میں 67واں پھول میلے کا افتتاح اسپیکر بمان بنرجی نے کیا ۔پھول میلے کے موقع پر وزیر راجیو بنرجی شرکت کریں گے یا نہیں اس کو لیکر تعطل بنا ہوا تھا کیوں کہ گزشتہ کل کی کابینہ میٹنگ میں وہ غیر حاضر رہے تھے ۔ادھر اپوزیشن لیڈر سوجن چکرورتی نے کہاکہ جب اسمبلی میں پھول میلے کی تقریب کی جا سکتی ہے اور راجستھان اور مہاراشٹر میں اسمبلی اجلاس کی جا سکتی ہے تو مغربی بنگال میں تو یقیناً اجلاس بلایا ہی جا سکتاہے اور بلایا جانا چاہیئے ۔ مرکز میں نریندر مودی کی حکومت کسان بل پاس کر وا سکتی ہے تو یہاں تو اسمبلی بلائی جا سکتی ہے ۔یہاں قابل ذکر ہے کہ کئی دنوں سے جب سے شوبھیندو ادھیکاری نے بی جے پی میں شامل ہوئے ہیں تو ان کے پیچھے پیچھے راجیو بنرجی بھی بی جے پی میں جانے والے ہیں یا نہیں ۔ جب اس بارے میں وزیرجنگلات راجیو بنرجی سے دریافت کیا گیا کہ آج وہ آئے ہیں اسمبلی میں لیکن گزشتہ کل کابینہ میٹنگ میں نہیں آئے تھے تو راجیو بنرجی نے گومگو ہی برقرار رکھتے ہوئے کہ آج تو میں آیا ہوں کیوں کہ مجھے محسوس ہوتا کہ آج کے کوویڈ کے دور میں اس طرح کے پھول میلے کی از حد ضرورت ہے ۔ ان کی اس بات سے اسپیکر بھی متفق تھے ۔ جہاں تک کل کے کابینہ میٹنگ کی بات ہے تو کابینہ میں نہیں جا سکونگا وہ جہاں پر بتانا تھا وہ بتا دیا ہے ۔ میں اس معاملے میں کسی طرح کے تعطل کی بات نہیں کرونگا یعنی انھوں نے اس بارے میں نہ تو تصدیق کی کہ وہ ترنمول چھوڑ کر جا رہی ہیں یا یہ ہے بی جے پی میں شمولیت حاص کریں گے کہ نہیں ۔ اس بارے میں وزیر تعلیم پارتھو چٹرجی سے بھی پوچھا گیا کہ گزشتہ کل تو راجیو بنرجی کابینہ میٹنگ میں شامل نہیں ہوئے تھے تو پارتھو چٹرجی نے کہا کہ آج وہ آئے ہیں نہ کل نہیں آئے تھے اور نہ آنے کی وجہ بھی انھوں نے بتائی تھی ، اس لئے اس معاملے میں کچھ نہیں کوئی تبصرہ نہیں کرونگا ۔ قابل ذکر ہے کہ پھول میلے میں کلیانی کی طرف سے لگائے گئے پھول نے پہلا مقام حاصل کیا جبکہ کلکتہ کارپوریشن کے پھولوں کو دوسرا مقام حاصل کرنے کا اعزاز ملا ہے ۔ پھول میلے میں وزیر سجیت بوس، اور کانگریس ایم ایل اے اسیت مترا نے شرکت کی لیکن اپوزیشن لیڈر عبدلمنان نہیں آسکے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔