نعت رسول

کرم ان پہ شاہ ہدی کر رہے ہیں
جو مدحت کا روشن دیا کر رہے ہیں

مدینے کے پرنور جلوے جہاں میں
دوعالم کی روشن فضا کر رہے ہیں

ملے اک جھلک پاۓ ناز نبی کی
فلک کے ستارے دعا کر رہے ہیں

سماں کیف آور ہے شہر نبی کا
نظارے یہ ارض وسما کر رہے ہیں

چراغ محبت جلا کر دلوں میں
دوانے نبی کی ثنا کر رہے ہیں

معطر گلستاں ہوجائے دل کا
یوں ذکر حبیب خدا کر رہے ہیں

ہے معیار شعر و سخن جو رضا کا
انھیں کی تو ہم اقتدا کر رہے ہیں

کرم ہو غلاموں پر اے جان عالم
دعائیں یہ صبح و مسا کر رہے ہیں

ثناے نبی کے مہکتے گلوں سے
سعیدی معطر فضا کر رہے ہیں

فیروز رضا سعیدی کشن گنجوی
9353233428

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔