جنوری کے اواخر میں کانگریس اور بائیں محاذ کے درمیان سیٹیوں کی تقسیم کا مسئلہ حل ہوجانے کی امید

کلکتہ 18جنوری مغربی بنگال اسمبلی انتخابات کے پیش نظر کانگریس اور بائیں محاذ کےدرمیان سیٹوں کی تقسیم اور انتخابی حکمت عملی اس مہینے کے اواخر تک طے ہوجانے کی امید ہے ۔اور اس کےلئے اگلے ہفتے 25اور 28جنوری کو دونوں جماعتوں کے لیڈروں کی میٹنگ ہوگی ۔خیال رہے کہ کل بایاں محاذ اور کانگریس کے لیڈروں کے درمیان میٹنگ ہوئی تھی ۔جس میں مختلف امور پر بات چیت ہوئی ۔
میٹنگ میں بایاں محاذ کے چیر مین بمان بوس ،سوریہ کانت مشرا اور سی پی ایم کے دیگر لیڈر موجود تھے جب کہ کانگریس کے ریاستی صدر ادھیررنجن چودھری ، ممبر پارلیمنٹ پردیپ بھٹاچاریہ اور اپوزیشن لیڈر عبد المنان موجود تھے ۔اسمبلی انتخابات اپریل اور مئی میں ہونے کی توقع ہے ۔دونوں پارٹوں کے لیڈروں نے مزید میٹنگ کرنے پر اتفاق رائے کیا ہے ۔
دونوں پارٹیوں کے ذرائع کے مطابق 25اور 28جنوری میٹنگ ہوگی جس میں سیٹوں کی تقسیم ، انتخابی حکمت عملی ، انتخابی مہم اور دیگر معاملات طے کئے جائیں گے ۔2016 کے مغربی بنگال اسمبلی انتخابات میںدونوں جماعتوں نےمل کر انتخاب لڑا تھا اور 294 ممبران اسمبلی میں 76 نشستیں حاصل کیںتھیں ۔تاہم 2019کے لوک سبھا انتخابات دونوں پارٹیوں کے درمیان اتحاد نہیں ہوسکا تھا ۔
بائیں محاذ کے چیئرمین اور سی پی آئی ایم کے پولٹ بیورو کے ممبر بمان بوس نے کل میٹنگ کے بعد کہا تھا کہ کانگریس کے ساتھ ان کی گفتگو خوشگوار اور نتیجہ خیز تھی۔انہوں نے کہا کہ بی جے پی جیسی فرقہ پرست جماعت اور بدعنوان ترنمول کانگریس کو شکست دینے کےلئے کانگریس اور بائیں بازو کی جماعتوں کا اتحاد لازمی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں جماعتیں ہی بنگال میںا من و امان اور اتحاد کی فضا قائم کرنے کے ساتھ ساتھ بنگا ل کی ترقی کرسکتی ہے۔
ذرائع کے مطابق کانگریس نے 130اسمبلی حلقوں میں انتخاب لڑنے کی خواہش ظاہر کی ہے مگر بائیں بازوں کی جماعتیں 130سیٹیں دینے کو تیار نہیں ہے۔ادھیرنجن چودھری نے کہا کہ سیٹوں کی تقسیم کا مسئلہ ایک میٹنگ میں حل نہیںہوگا ۔بلکہ اس کےلئے کئی میٹنگ ہوں گی تاہم اس مہینے میں اس کو حل کرلیا جائے گا ۰
پارٹی ذرائع نے بتایا کہ کانگریس 130 نشستوں پر انتخاب لڑنا چاہتی ہے لیکن بائیں بازو کے رہنماؤں نے اس مطالبے کو قبول نہیں کیا۔
دونوںپارٹیوں کے ذرائع کے مطابق کلکتہ میں دونوں پارٹیاں ایک مشترکہ ریلی کے ذریعہ انتخابی مہم کا آغاز کریں گے۔
مغربی بنگال ، آسام ، تمل ناڈو اور کیرالہ میںاپریل اورمئی میں انتخابات ہونے کا امکان ہے۔

(یواین آئی)

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔