بی جے پی حکومت این آئی اے کا غلط استعمال کرنا بند کرے اور ایس ڈی پی آئی کے کارکنوں کی گرفتاری سیاسی سازش کا حصہ ہے*

بنگلور ۔ ( پریس ریلیز)۔ بی جے پی حکومت لگاتار NIA اور مختلف ایجنسیوں کو مظلوموں کی آواز اٹھانے والے تنظیموں اور تحریکوں کے خلاف استعمال کر رہی ہے ہمارا مطالبہ ہے کہ یہ کھیل فوراً بند کرے ایس ڈی پی آئی کے اسٹیٹ جنرل سیکرٹری افسر کوڈلی پیٹ نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مطالبہ کیا..
آگست کے مہینے میں جو ڈی جے ہلی بنگلور میں گستاخ رسول کا معاملہ چلا اور آقا صل اللہ علیہ و سلم کی شان میں گستاخی کی اس پر ہنگامہ برپا ہوا یہ ہنگامہ ایک سیاسی سازش کا حصہ تھا اسکی تمام تر تحقیق پہلے دن سے اسٹیٹ پولیس اوراین آئی اے کرتی آرہی ہے ابھی تک ہزاروں نوجوانوں کی تحقیق کی جا چکی ہے…
مرکزی حکومت کے اشاروں پر این آئی اے سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کو نشانہ بنا رہی ہے اسی کے تحت کل ایس ڈی پی آئی کے بنگلور صدر شریف صاحب سمیت کچھ کارکنان کو گرفتار کیا گیا ہے ۔ حالانکہ جب جب بھی این آئی اے نے ایس ڈی پی آئی کے کارکنوں کو طلب کیا اسوقت ہمارے کارکنوں نے این آئی اے کی تحقیق میں بھرپور تعاون کیا یہاں تک کہ کارکنوں کے موبائل فون اور کئ آفس تک کی تلاشی لی گئی مگر کچھ ہاتھ نہیں لگا اسکے بعد بھی مختلف انداز اور طریقوں سے تحقیقات کو جاری رکھا گیا مگر تمام تر ڈی جی ہلی فسادات میں ایس ڈی پی آئی کا رتی برابر ہاتھ نا ملا اور ناکامی ہاتھ آئی
بی جے پی کے سیاسی رہنماؤں اور لیڈروں کے اشاروں پر این آئی اے ایجنسی ایس ڈی پی آئی کو نشانہ بنارہی ہے جو اپنی ناکامی کو چھپانے کا ایک ناکام ہتھکنڈ ہ ہے
بی جے پی کی ذہنیت رکھنے والا اور اسکی حمایت کرنے والا مجرم گستاخ نوین جس نے آقا صل اللہ علیہ و سلم کی شان کے خلاف توہین آمیز پوسٹ کئے جس کی بنا پر یہ فساد برپا ہوا اور ہجوم اکھٹا ہوئی
حالانکہ اسکا اصل مجرم کانگریس سابق کارپوریٹر سمپپت راج ہے جو آج تک جیل میں بند ہے اور اسکے خلاف UAPA کالا قانون کے تحت مقدمہ درج نہیں کیا گیا اور دوسرا اصل مجرم گستاخ نوین کو ہلکا سا کیس بنا کر اسکو ضمانت پر رہا کر دیا گیا جو سراسر ناانصافی ہے
جبکہ بے قصور مسلم نوجوانوں کو یو اے پی اے کالے قانون کے تحت گرفتار کر لیا گیا ہے جس کے بنا پر بے قصوروں کے گھروں کے حالات ناگفتہ بہ ہیں
سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا کو نشانہ بنانے کی اصل وجہ کرونا کے وقت جس پارٹی نے سب سے بڑھ کر بلا تفریق مذہب و ملت انسانیت کی خدمت کی جس کی بنا پر پورے ملک میں ایس ڈی پی آئی کی خدمات کو سراہا یا گیا اور قدر کی نگاہ سے دیکھا گیا اس کو بدنام کرنے کے لئے یہ تمام حربے اختیار کئے جارہے ہیں اور ایس ڈی پی آئی جو کئ سالوں سے مسلم اور بچھڑے پسماندہ طبقات کو سیاسی بیداری اور ترقی کے لئے کام کر رہی ہے اسی وجہ سے یہ سب کچھ کیا جارہا ہے۔ اس کے علاوہ ایس ڈی پی آئی کی جانب سے جو میٹنگ آگست کے مہینے میں کرونا سے متاثر افراد کی خدمت اور یوم آزادی کے جشن منانے کے سلسلے میں منعقد کی گئی تھی اس کو نشانہ بنا کر یہ تاثر دیا جا رہا ہے کہ یہ میٹنگ فساد پرپا کرنے کے لئے رکھی گئی تھی حالانکہ یہ سراسر جھوٹ پر مبنی پروپگینڈہ ہے اب اسپر عمل درآمد کرنے کے لئے اعلی افسران جھوٹے گواہوں کو کھڑے کر رہے ہیں انشاءاللہ یہ بھی ناکام کوشش رہے گی۔ اس پریس کانفرنس میں مجید خان اسٹیٹ وآئس پریسیڈنٹ ، مجاہد پاشاہ اسٹیٹ جنرل سیکرٹری ، ہیچ ایم گنگا اپا بنگلور ڈسٹرکٹ وآئس پریسیڈنٹ ، اکرم حسن اسٹیٹ ممبر ، سلیم احمد اسٹیٹ جنرل سیکرٹری بنگلور موجود رہے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔