قلم اٹھاؤ!

اداس لوگو !

اداسیوں کا لباس تن سے اتار پھینکو

اے خواہشوں کے اسیر لوگو !

حقیقتوں سے نظر نہ پھیرو

کئی سسکتی ہوئی سی بے سود خواہشوں کا

جو آج نوحہ سنا رہے ہو

اسی پہ رونا شعار تم نے بنالیاہے

ذرا بتاؤ !

کہ خواب تکنا

انہیں میں جینا

انہیں میں شام وسحر بِتانا

عجب نہیں ہے

قلم اٹھاؤ !

حقیقتوں کا صفحہ نکالو

اور اس پہ لکھّو کہ بھوک کیا ہے

یہ ننگ کیاہے

اگر تمھیں اس جہانِ فانی کی چاہتوں سے

ملے جو فرصت

تو آنکھ کھولو !

ضرور لکھو فضاؤں کے دکھ

ہواؤں کے دکھ

وہ بیٹیوں کی رداؤں کے دکھ

غریب لوگوں کے خواب لکھّو

تمام ان کے عذاب لکھّو

خیال کی اس عجیب و کمزور ایک دنیا میں جینے والو !

تمھیں تو ہجر و وصال لکھنا ہے

اور پھولوں کو گال لکھنا ہے

حسن کو لازوال لکھنا ہے

زلف ، عارض ، یہ نین ،کنگن

انھیں کو تم نے کمال لکھنا ہے

تم کو کیاغم

محبتوں کے غموں کو تم نے عظیم غم جو بنالیا ہے

جو مفلسی کی اذیتوں کے عذاب ٹوٹے تو کیاکروگے

سو اس سے پہلے ہی آنکھ کھولو

نہ خواب دیکھو !

جو زندگی کو ترس رہے ہیں

کبھی تو ان کے عذاب لکھّو

قلم اٹھاؤ

اداس لوگو !

فوزیہ ربابؔ

خبریں

ڈاکٹر ہرش وردھن دہلی کے اسپتالوں میں ٹیکہ کاری مہم کا جائزہ لیں گے

  نئی دہلی، 16 جنوری  مرکزی وزیر برائے صحت اور خاندانی بہبود ڈاکٹر ہرش وردھن آج دہلی کے مختلف اسپتالوں میں جا کر کورونا ٹیکہ کاری مہم کا جائزہ لیں۔…

مضامین و مقالات

سال 2020 کی ہنگامہ آرائیاں اور حوصلہ خیز کار گزاریاں ۔۔۔

عمیر محمد خان ریسرچ سکالر رابط: 9970306300 سال2020 ہمارے ذہنوں میں ہمیشہ تروتازہ رہے گا۔اس سال دلدوز واقعات رونما ہوئے اور ساتھ ہی خوش آئنداور اختراعی کام عمل میں آئے۔خوف…

اسلامیات

مال دار تو بہت ہیں مگر دلدار نہیں ہیں

۔ شمشیر عالم مظاہری دربھنگوی امام جامع مسجد شاہ میاں رہوا ویشالی بہار قارئینِ کرام ۔ اللہ تعالی نے جن کو مال سے نوازا ہے ان میں بہت کم ایسے…

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے